شازیب قتل کے تمام ملزم دوبارہ گرفتار

0
578

سپریم کورٹ نے کراچی میں قتل ہونے والے شاہ زیب قتل کے مقدمے سے متعلق از خود نوٹس کی سماعت کرتے ہوئے سندھ ہائی کورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے اس مقدمے میں ملوث چاروں مجرمان کو دوبارہ گرفتار کرنے کا حکم دیا ہے۔
عدالت کے حکم پر پولیس نے کمرہ عدالت میں موجود مجرمان کو گرفتار کر لیا ہے۔
نامہ نگار شہزاد ملک کے مطابق عدالت نے اپنے حکم میں وزارت داخلہ کو کہا ہے کہ جب تک قتل کے اس مقدمے کا فیصلہ نہیں ہو جاتا اس وقت تک مجرمان کے نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں ڈال دیے جائیں۔
ان مجرمان میں شاہ رخ جتوئی، سراج تالپور،مرتضیٰ لاشاری اور نواب سجاد علی تالپور شامل ہیں۔

سپریم کورٹ نے یہ حکم سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف سول سوسائٹی کی طرف سے دائر کی جانے والی درخواستوں پر دیا ہے۔ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے بعدازاں ان درخواستوں کو از خود نوٹس میں تبدیل کر دیا تھا۔
سندھ ہائی کورٹ کے ڈویژن بینچ نے شاہ زیب قتل کے مقدمے میں انسداد دہشت گردی کی دفعات کو ختم کر کے اسے سیشن جج کی عدالت میں بھجوا دیا تھا۔ شاہ زیب کے ورثا کی مجرمان کے ساتھ صلح ہونے کی وجہ سے اُنھیں اس مقدمے سے رہا کر دیا تھا۔
اس سے قبل انسداد دہشت گردی کی عدالت نے جرم ثابت ہونے پر ان چاروں مجرمان کو موت کی سزا سنائی تھی۔
شکریہ بی بی سی اردو

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here