سیب جتنی بچی زندگی کی بازی جیت گئی

0
41

امریکہ کے ایک ہسپتال میں محض 245 گرام وزن کے ساتھ وقت سے پہلے پیدا ہونے والی ایک بچی زندگی کی جنگ جیتنے کے بعد گھر چلی گئی۔
’سیبی‘ نامی اس ننھی بچی کا وزن اتنا ہی تھا جتنا کہ ایک سیب کا ہوتا ہے اور وہ دسمبر 2018 میں حمل کے 23ویں ہفتے اور تین دن بعد ہی پیدا ہو گئیں۔
کیلیفورنیا کے علاقے سان ڈیاگو میں زندگی کی جنگ لڑتی اس بچی کو شارپ میری بریچ ہسپتال کے انتہائی نگہداشت کے وارڈ میں منتقل کیا گیا۔
ڈاکٹر نے سیبی کے والدین کو بتایا تھا کہ وہ شاید محض چند گھنٹے ہی زندہ رہ پائیں گی۔لیکن پانچ ماہ بعد انھیں جب ہسپتال سے فارغ کیا گیا تو تمام تر توقعات کے برعکس ان کا وزن 2.5 کلو ہو چکا تھا۔
سیبی کی دیکھ بھال کرنے والی ایک نرس کا کہنا تھا اس بچی کی بحالی اور ہسپتال سے جانے تک کا مرحلہ ایک حیران کن ہے۔
سیبی وقت سے پہلے پیدا ہونے والے بچوں میں زندہ رہ جانے والی اب تک کی سب سے چھوٹی بچی ہیں۔اس سے پہلے یہ ریکارڈ جرمنی کی ایک بچی کا تھا جو 2015 میں پیدائش کے وقت 252 گرام کی تھی۔
رواں برس جاپان میں ایک بچہ پیدا ہوا جس کا وزن 268 گرام تھا۔ اور اسے اب تک وقت سے پہلے پیدا ہو کر زندہ بچ جانے والا بچہ قرار دیا جا رہا تھا۔
سیبی کی ماں نے انہیں مقرر وقت سے تین ماہ قبل ہی ایک ہنگامی سی سیکشن کے ذریعے جنم دیا۔
ہسپتال کی جانب سے جاری کی گئی ویڈیو میں سیبی کی ماں نے کہا ’یہ میری زندگی کا خوف ناک ترین دن تھا۔‘
’میں ان سے کہتی جا رہی تھی کہ وہ نہیں بچے گی۔ میرے صرف 23 ہفتے ہوئے ہیں۔وہ وقت سے اتنا پہلے پیدا ہو گئیں کہ ڈاکٹروں نے انہیں ’مائیکرو پریمی‘ قرار دیا جو 28 ہفتوں سے بھی پہلے پیدا ہو گئیں۔ ہسپتال کے مطابق بچے عموماً 42 ویں ہفتے میں پیدا ہوتے ہیں۔
ہسپتال کے مطابق وہ اتنی چھوٹی تھیں کہ طبی عملے کی ہتھیلی پر پوری آ رہی تھیں۔
ڈاکٹروں کے مطابق سیبی کی بقا اس لیے ممکن ہوئی کیونکہ پیدائش کے وقت انہیں کوئی پیچیدگیاں درپیش نہیں تھیں۔
ہسپتال کے مطابق سیبی کو وقت سے پہلے پیدا ہونے والی بچوں کو پیش آنے والے طبی مسائل میں سے کسی کا سامنا نہیں کرنا پڑا جیسے کہ دماغ میں خون کا رسنا یا پھیپھڑوں اور دل کے مسائل۔بشکریہ بی بی سی اردو

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here