قائد اعظم کی تصویر ہٹادی گئ

0
664


علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے طلبا یونین آفس میں80سال سے آویزاں قائداعظم کی تصویر غائب کردی گئی ،یونی ورسٹی میں1938سے لگی تصویر کوبی جے پی کے رکن اسمبلی نے ہٹانے کا مطالبہ کیا تھا۔
بھارت کے ایک نجی ٹی کے مطابق بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے رہنما ستیش کمار نے دو روز قبل علی گڑھ یونیورسٹی کے وائس چانسلر طارق منصور کو ایک خط تحریر کیا تھا جس میں ان کا کہنا تھا وطن کی تقسیم کے بعد یونیورسٹی میں محمد علی جناح کی تصویر کیا کر رہی ہے ۔
علی گڑھ سے رکن اسمبلی ستیش کمار کے خط کے جواب میں یونیورسٹی کے ترجمان شافع قدوائی نے تصویر کی موجوگی کی حمایت میں کہا تھا کہ محمد علی جناح اس جامعہ کے بانیان میں سے تھے اور ان کی یہ تصویر کئی عشروں سے یہاں لگی ہوئی ہے۔روایت کے مطابق تمام تاحیات ممبرز کی تصاویر اسٹوڈنٹ یونین آفس میں چسپاں کی جاتی ہیں جناح کی تصویر بھی یونیورسٹی کے اسی اصول کے تحت یونین آفس میں آویزاں ہے۔
تاہم آج قائد اعظم محمد علی جناح کی تصویر ہٹادی گئی لیکن افسوس ناک پہلو یہ ہے کہ تصویر کس نے ہٹائی کس کے حکم پر ہٹوائی اس کی تاحال تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔بشکریہ روزنامہ جنگ

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here